پرنٹ        دوست کو ارسال

فردوسی، ایران کا عالمی شہرت یافتہ شاعر

 

فردوسی جن کا پورا نام حکیم ابوالقاسم ہے ان سینکڑوں ایرانی شاعروں میں مانے جاتے ہیں جن کو دنیا میں شہرت حاصل ہے جبکہ ادب و تہذیب سے تعلق رکھنے والے فردوسی کو یونانی شاعر ہومر کا ہم پلہ قرار دیتے ہیں۔ فردوسی کی شاہکار تصنیف شاہنامہ ہے جو دنیا میں ممتاز مقام رکھتی ہے، فردوسی نے فارسی ثقافت اور ادب کے تحفظ کے لئے اہم خدمات سرانجام دیں. اس شاعر نے اپنی تمام زندگی فارسی زبان کی خدمت میں گزاری.

حکیم ابوالقاسم حسن پور علی طوسی عرف فردوسی دسویں صدی عیسوی (چوتھی صدی ھجری) کے نامور اور معروف فارسی شاعر جو 940ء (329ھ) میں ایران کے علاقے خراسان کے شہر طوس کے ایک گاؤں میں پیدا ہوئے اور 1020ء (416ھ) میں وفات پا گئے.
شاہنامہ تقریباً 60000 سے زائد اشعار پر مشتمل ہے جس میں ایرانی داستانیں اور ایرانی سلطنتیں جیسا کہ پیشدادیان، کیانیان، اشکانیان اور ساسانیان کی تاریخ بیان کی گئی ہے.
فردسی کا مزار فارسی ادب اور ثقافت پر دلچسبی رکھنے والوں کو اپنی طرف متوجہ کر رہا ہے جو پاژ نامی گاؤں کے 28 کیلومیٹر کے قریب میں واقع ہے۔

 

 

 


15:38 - 4/04/2020    /    نمبر : 747524    /    نمایش کی تعداد : 750



بندکریں




The official website of the President of the I.R. Iran

Read More

Ministry of Culture and Islamic Guidance

Read More

Islamic Culture and Relations Organization

Read More

The Office of the Supreme Leader,

Read More

Tehran Museum

Read More

Iranian Academy OF arts

Read More

Iranian Cultural Heritage,

Read More

ICRO Digital Library

Read More

Islamica

Read More

Iranology

Read More

educationiran

Read More

 

اسلامی جمہوریہ ایران کےثقافتی مراکز، 67 ترقی یافتہ ممالک کےساتھ ساتھ ، پاکستان کے مختلف شھروں سمیت پشاور میں ثقافت کےخدمات انجام دے رہے ہیں۔ یہ تمام ثقافتی مراکز، ایران کی اسلامی ثقافت و روابط کی آرگنائزیشن سے منسلک ہیں، جو ایک ثقافتی ادارے کے طور پر اسلامی جمہوریہ ایران  کے ثقافتی پروگراموں کی ہم آہنگی، نگرانی اور عمل درآمد کے ذمہ دار ہیں۔