پرنٹ        دوست کو ارسال

شہید قدس

دہشت گردی کے خلاف جنگ کا عالمی ہیرو، قاسم سلیمانی

ایران سمیت پوری دنیا میں سردار محاذ استقامت اور سپاہ قدس کے کمانڈر شہید جنرل قاسم سلیمانی اور ان کے ساتھیوں کی پہلی برسی منائی گئی۔

سپاہ قدس کے کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی، عراق کی عوامی رضاکار فورس کے ڈپٹی کمانڈر ابومہدی المہندس اور ان کے آٹھ دیگر ساتھیوں اور محافظوں کو، امریکی دہشت گرد فوجیوں نے تین جنوری دوہزار بیس کو بغداد ایئر پورٹ کے قریب ایک بزدلانہ اور دہشت گردانہ  ڈرون حملے میں شہید کردیا تھا۔

سردار شہدائے استقامت کا لقب پانے والے شہید قاسم سلیمانی نے اپنی بابرکت زندگی کے دوران اسلام کے سچے سپاہی اور جرنیل کی حیثیت سے بلاتفریق ملک و ملت، اسلام اور قرآن کی سربلندی اور مظلوم مسلمانوں کے دفاع کے لیے اپنی بے لوث خدمات پیش کیں۔

سپاہ پاسدران انقلاب اسلامی کی قدس فورس کے کمانڈر کی حیثیت سے شہید جنرل قاسم سلیمانی نے عراق اور شام میں داعش کی نابودی میں کلیدی کردار ادا کیا اور عوامی رضاکار فورس کی تشکیل وتربیت کے ذریعے ان ملکوں کے عوام کو امن و سکون واپس لوٹایا۔

رہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای نے جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت پر اپنے تعزیتی پیغام میں فرمایا تھا کہ دنیا بھر کے شیطانوں اور شرپسندوں کے مقابلے میں برسوں کی مخلصانہ اور شجاعانہ جد و جہد اور راہ خدا میں شہید ہونے کی ان کی آرزو رنگ لائی اور سلیمانی کو اس بلند و بالا مقام سے ہمکنار کیا اور ان کا خون بشریت کے شقی ترین افراد کے ہاتھوں زمین پر بہایا گیا۔ رہبر انقلاب اسلامی نے شہید قاسم سلیمانی کو مزاحمتی و استقامتی محاذ کی عالمی پہچان قرار دیتے ہوئے فرمایا تھا کہ اس محاذ سے وابستہ تمام افراد ان کے انتقام کے طالب ہیں اور سبھی دوست اور سبھی دشمن یہ سمجھ لیں کہ مزاحمت و استقامت کی راہ مزید مستحکم عزم و حوصلے کے ساتھ جاری و ساری رہے گی اور یقینی طور پر کامیابی اس مبارک راہ میں گامزن رہنے والوں کے قدم چومے گی۔آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای نے فرمایا تھا کہ ایرانی عوام شہید والا مقام جنرل قاسم سلیمانی اور ان کے ہمراہ شہید ہونے والوں بالخصوص عظیم مجاہدِ اسلام جناب ابو مہدی المہندس کو کبھی فراموش نہیں کریں گے۔


10:34 - 9/01/2021    /    نمبر : 763135    /    نمایش کی تعداد : 167



بندکریں




The official website of the President of the I.R. Iran

Read More

Ministry of Culture and Islamic Guidance

Read More

Islamic Culture and Relations Organization

Read More

The Office of the Supreme Leader,

Read More

Tehran Museum

Read More

Iranian Academy OF arts

Read More

Iranian Cultural Heritage,

Read More

ICRO Digital Library

Read More

Islamica

Read More

Iranology

Read More

educationiran

Read More

 

اسلامی جمہوریہ ایران کےثقافتی مراکز، 67 ترقی یافتہ ممالک کےساتھ ساتھ ، پاکستان کے مختلف شھروں سمیت پشاور میں ثقافت کےخدمات انجام دے رہے ہیں۔ یہ تمام ثقافتی مراکز، ایران کی اسلامی ثقافت و روابط کی آرگنائزیشن سے منسلک ہیں، جو ایک ثقافتی ادارے کے طور پر اسلامی جمہوریہ ایران  کے ثقافتی پروگراموں کی ہم آہنگی، نگرانی اور عمل درآمد کے ذمہ دار ہیں۔